Home / Article / ناقابل یقین پی آئی اے کا ماضی اور حال

ناقابل یقین پی آئی اے کا ماضی اور حال

ناقابل یقین پی آئی اے کا ماضی اور حال

‘مالٹا کا رقبہ صرف 315 مربع کلومیٹر اور آبادی چار لاکھ 29 ہزار ہے
یوں یہ یورپ کے مختصر لیکن خوبصورت ترین ممالک میں شمار ہوتا ہے‘ یہ ملک یورپ میں ہونے کے باوجود پاکستان کے ساتھ ایک دلچسپ رشتے میں بندھ اہوا ہے‘ یہ رشتہ آپ کو بھی حیران کر دے گا‘
مالٹا نے 1971ء میں اپنی ائیر لائین بنانے کا فیصلہ کیا‘ البرٹ میزی کو منصوبے کا چیئرمین بنایا گیا‘ میزی نے سول ایوی ایشن اور ائیر لائین تشکیل دینی تھی‘ انٹرنیشنل ٹینڈر ہوا۔
ہماری پی آئی اے ایشیا کی سب سے بڑی اور کامیاب ائیر لائین تھی‘ پی آئی اے نے ٹینڈر بھر دیا‘
مالٹا کو یورپ‘ مشرق بعید اور امریکا کی کمپنیوں کی طرف سے بھی کاغذات موصول ہوئے تھے
بورڈ نے پڑتال کی امریکا یورپ اور مشرق بعید کے ٹینڈرز مسترد کیے اور پی آئی اے کو سلیکٹ کر لیا‘
پی آئی اے نے مالٹا کے ساتھ ائیر لائین پارٹنر شپ کی اور صرف ایک سال میں ائیر مالٹا کے نام سے یورپ میں ایک شاندار ائیر لائین کھڑی کر دی‘
ائیر مالٹا 31 مارچ 1973ء کو بنی اور پی آئی اے نے یکم اپریل 1974ء کو اس کا پہلا طیارہ ٹیک آف کرا دیا۔
پاکستانی ماہرین نے اس ایک برس میں مالٹا کی سول ایوی ایشن بنائی‘ ائیرپورٹس کو یورپین look دی اور ائیر لائین کو بھی آپریشنل کر دیا
آج ائیر مالٹا یورپ کی کامیاب اور منافع بخش ائیر لائینز میں شامل ہے یہ یورپ افریقہ اور امریکا کو بھی cover کرتی ہے اور اس کی فلائیٹس مشرق بعید بھی جاتی ہیں‘
ائیر مالٹا کو 43 برس ہو چکے ہیں‘ مالٹا کے لوگوں نے ان 43 برسوں میں پی آئی اے کا احسان یاد رکھا‘
مالٹا دنیا کا واحد ملک ہے جس نے پی آئی اے کو اپنے تعلیمی سیلیبس میں شامل کر رکھا ہے
یہ لوگ آج بھی ساتویں جماعت کے بچوں کو پی آئی اے کی مہربانی پڑھاتے ہیں اور مالٹا کے بچے پی آئی اے پر مضمون لکھ کر آٹھویں جماعت میں جاتے ہیں۔
یہ اس زمانے کی بات ہے جب پی آئی اے نے پوری دنیا کو حیران کردیا تھا
ہماری قومی ائیر لائین نے اس گولڈن دور میں بے شمار کمالات کیے
اس نے ائیر مالٹا کی طرح سنگا پور ائیر لائین بنائی‘ کوریا کو سول ایوی ایشن اور ائیر لائین بنانے میں مدد دی‘ ملائشین ائیر لائین بنائی اور ایمریٹس کی بنیاد رکھی‘ اور اسطرح یہ مختلف ائیر لائنز کی ماں کہلاتی ھے لیکن یہ بات آج کے زمانے میں شیخی محسوس ہوتی ہے
کہ ہم نے ایمریٹس کو کرائے پر جہاز بھی دیے تھے اور پائلٹ اور ائیر ہوسٹس بھی‘
ہم نے دنیا کی پانچ بڑی ائیر لائینز کے عملے کو ٹریننگ بھی دی تھی‘
آپ کو یہ بات بھی عجیب لگے گی کراچی کبھی ایشیا کا دروازہ ہوتا تھا
ایشیا کے 80 فیصد مسافر کراچی سے ہو کر یورپ‘ افریقہ اور امریکا جاتے تھے اور یورپ‘ افریقہ اور امریکا کے مسافر بھی ایشیا میں داخل ہونے سے پہلے کراچی میں اترتے تھے
لیکن وہ شاندار ماضی اور وہ شاندار ائیر لائین آج کہاں ہے؟
جب سے پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کی باریاں شروع ہوئی تو ہمارے تمام بڑے بڑے ادارے سیاست کے بھینٹ چڑھ گئے۔ اقربا پروری، کرپشن، عہدوں کی بندربانٹ اور یونین ازم نے دنیا بھر میں ہماری پہچان پی آئی اے کو بھی زمین بوس کردیا-

تحریر: عمران عاطف چوہدری

About admin

Check Also

(ایک اور فیصلہ (پروفیسر رفعت مظہر

(ایک اور فیصلہ (پروفیسر رفعت مظہر قلم درازیاں ہم نہیں جانتے کہ آئین کیا ہے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *